کاروبار
21 اکتوبر ، 2022

بھارت نے گوگل کو 35 ارب روپے جرمانے کی سزا سنادی

بھارت کے مسابقتی کمیشن نے یہ سزا سنائی / رائٹرز فوٹو
بھارت کے مسابقتی کمیشن نے یہ سزا سنائی / رائٹرز فوٹو

بھارت نے متعدد مارکیٹوں میں اپنی اینڈرائیڈ ایپس کی بالادستی برقرار رکھنے کے لیے کیے جانے والے مبینہ اقدامات پر گوگل پر 16 کروڑ 19 لاکھ ڈالرز (35 ارب پاکستانی روپے سے زائد) کا جرمانہ عائد کردیا ہے۔

یہ سرچ انجن کمپنی کے لیے بہت بڑا دھچکا ہے کیونکہ وہ بھارت کو بہت زیادہ اہمیت دیتی ہے اور ایک دہائی کے دوران وہاں اربوں ڈالرز کی سرمایہ کاری کرچکی ہے۔

بھارت کے مسابقتی کمیشن (سی سی آئی) نے ساڑھے 3 سال کی تحقیقات کے بعد 20 اکتوبر کو گوگل کو جرمانے کی سزا سنائی تھی۔

سی سی آئی نے کہا کہ گوگل نے آن لائن سرچ اور اینڈرائیڈ ڈیوائسز کے لیے ایپ اسٹور میں اپنی بالادست پوزیشن کو اپنی ایپس جیسے کروم اور یوٹیوب کے تحفظ کے لیے استعمال کیا اور مخالف ایپس کو دبایا۔

مسابقتی کمیشن نے اینڈرائیڈ پلیٹ فارم کے لیے گوگل کو اپنا طریقہ کار بدلنے کا حکم بھی دیا۔

دوسری جانب 21 اکتوبر کو گوگل نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہ جرمانہ بھارتی صارفین اور کاروباری اداروں کے لیے بہت بڑا دھچکا ہے۔

گوگل کے ایک ترجمان کے مطابق اینڈرائیڈ سے ہر ایک کے لیے مواقع پیدا ہوئے ہیں اور یہ آپریٹنگ سسٹم بھارت سمیت دنیا بھر میں لاکھوں کامیاب کاروباری اداروں کی معاونت کررہا ہے۔

گوگل کا کہنا تھا کہ اس کی جانب سے فیصلے کا جائزہ لیا جارہا ہے جس کے بعد اس حوالے سے اقدامات کا تعین کیا جائے گا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM